Passage 1

کاروبار میں دیانت سے اضافہ اور ترقی ہوتی ہے۔ کیونکہ اس طرح خریداروں کا دکاندار پر اعتماد قائم ہوتا ہے۔ اگر یہ اعتماد ختم ہو جائے تو کاروبار ٹھپ ہو جاتا ہے۔ کاروبار میں بد دیانتی گناہ ہے۔ اس تاجر کو اپنے مسلمان بھائیوں کے ساتھ کوئی ہمدردی نہیں ہوتی۔ وہ فریب کاری کے ذریعے ان کا نقصان کر کے فائدہ اٹھاتا ہے۔  ملاوٹ کر کے لوگوں کی صحت کے ساتھ کھیلتا ہے۔ ایسا شخص انسانیت کا دشمن ہے۔ وہ مسلمان ہونے کا دعویٰ کیسے کر سکتا ہے؟

 

Honesty in business leads growth and progress. In this way, a trader can win his customers’ trust. If this trust runs out, the business falls into ruin. Dishonesty in business is a sin. A dishonest trader has no feelings for his Muslim brethren. Through dubious dealings, he profits from their loss. He plays with the health of people by adulterating their food. Such a person is an enemy of humankind. How can he claim to be a Muslim?

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *